محرم الحرام

اسلامی سال محرم الحرام 1443ھجری کا آغاز ھوگیا اللّٰہ رب العالمین تمام امت مسلمہ کیلئے اس سال کو باعث رحمت ، برکت و سلامتی بنائے آمین۔

تمام مکاتب فکر کے علماء کرام سے بالعموم اور مکتب اھل تشیع سے بالخصوص ان ایام امام حسین علیہ السلام کی مناسبت سے چند گذارشات ۔ دوران مجالس و جلوس موجودہ وبائی کیفیت کووڈ 19 ۔ مکمل ایس او پیز کا خیال رکھنا ھم سب کی قومی وملی زمہ داری ھے اسکو رضاکارانہ طور پر اپنا کے خود کو اور دوسروں کو محفوظ رکھا جاسکتا ھے ۔ مذھبی رواداری کا دامن ہاتھ سے ھر گز نہ چھوڑنا شعار اھلبیت علیہم السلام کا طریقہ ھے اسکو اپنا کر عزاداری امام حسین علیہ السلام کو مؤثر بنایا جا سکتا ھے ۔ مجالس وجلوس کے مقامات پر عزاداران کی حفاظت پر مامور سیکیورٹی فورسز کے ساتھ بھر پور تعاون سے ھی اسلام اور ملک دشمن قوتوں کو شکست دی جاسکتی ھے۔ تمام مکاتب فکر کے علماء کرام اپنے جمعہ و مجالس کے خطبات میں اتحاد بین المسلمین کی اھمیت کو اجاگر کریں اور امت مسلمہ کو اتفاق اور اتحاد کا درس دیں جو اسوقت کی سب سے بڑی ضرورت ھے۔ کوشش کی جائے کہ سنی علماء کرام کو مجالس عزا میں شرکت کی دعوت دی جائے اور انکا موقف قرآن وحدیث کی روشنی میں فلسفہ امام حسین علیہ السلام کے حوالے سے بیان کروایا جائے تاکہ شیعہ سنی عقائد اور اسلامی تعلیمات اور اھلبیت اور اصحابِ وازواج رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے بارے پھیلائے گئیے غلط پراپیگنڈا کی نفی ھوسکے۔ شیعہ علماء اور زاکرین حقیقی معنوں میں فضائل اھلبیت اور فلسفہ شہادت امام حسین علیہ السلام پر سیر حاصل گفتگو کریں تاکہ تمام مکاتب فکر کے سامعین اس سے مستفید ھو سکیں۔ منتظمین اھل تشیع ان علماء و ذاکرین کا انتخاب کریں جو غیر متنازع ھوں اور انکو متنازع موضوعات اور مناظرہ سے مشابہ تقاریر سے اجتناب کی پالیسی دی جائے۔ جلوسوں کے دوران نوجوانوں کو شرعی، اخلاقی اقدار کی پاسداری کی زمہ داری کا احساس دلا کے لایا جائے۔ ٹریفک، اخلاقیات اور اسلامی اقدار اور علاقائی رسم ورواج اور ایک دوسرے کے عقیدے کا احترام کرنا فرائض تصور کیا جائے۔ انتظامیہ اور قانون نافذ کرنیوالے اداروں کے ساتھ مکمل تعاون کیا جائے۔ یہ وہ تمام اقدامات ھیں جن کے ذریعے ھم شیعہ سنی بھائی چارے کی مثال قائم کر کے دشمن سہیونی قوتوں کے ناپاک عزائم خاک میں ملا سکتے ھیں۔ اللّٰہ تعالٰی محمد واھلبیت علیہ السلام کے وسیلہ سے ھم سب کو اتحاد بین المسلمین پر عمل درآمد کی توفیق عطا فرمائے اور امت مسلمہ کو سہیونی سازشوں سے محفوظ رکھے آمین۔

 

منجانب۔ آغا السید منور حسین کاظمی۔ بانی و بانی صدر انجمن جعفریہ جانثاران عباس علمدار (ضلع جہلم ویلی)

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے